عوام کو اس نااہل حکومت سے نجات دلانے کیلئے پیپلز پارٹی و دیگر پارٹیز سرگرم ہے، جنرل عبد القادر بلوچ

دالبندین (ڈیلی گرین گوادر) پاکستان پیپلز پارٹی کے صوبائی کوارڈنیٹر لیفٹیننٹ جنرل (ر)عبد القادر بلوچ نے دالبندین میں سابق صوبائی وزیر الحاج،حاجی علی محمد نوتیزئی کی عیادت کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس وقت بلوچستان میں مجھے لانگ مارچ کی تیاریوں کے متعلق کوارڈینٹر مقرر کیا گیا ہے میں ہر ضلع میں جاکر لانگ مارچ کے تیاریوں کا جائزہ لے رہاہوں،اس موقع پر نواب زادہ امیر شیر یار خان نوشیروانی، پیپلز پارٹی کے ضلعی صدر ملک رحمت اللہ نوتیزئی،شاہ نواز رئیسانی، حاجی غلام جان حسنزئی،ملک خلیل محمد حسنی، کامریڈ سید محمد نبی شاہ،عبد الغفار شاہ،ودیگر موجود تھے،عبد القادر بلوچ نے کہا 27 فروری کو بلوچستان سے ایک بہت بڑا قافلہ بلاول بھٹو کی قیادت میں لانگ مارچ میں شامل ہوگا،پیپلز پارٹی شروع دن سے عوام کو اس حکومت سے نکالنے کے لئے جتن کررہی ہے عوام کو اس نااہل حکومت سے نجات دلانے کیلئے پیپلز پارٹی و دیگر پارٹیز سرگرم ہے،پی ایم ایل این،جے یوآئی،ودیگر جماعتیں عدم اعتماد کے لئے سرگرم ہے انشاء اللہ عدم اعتماد کے ذریعے اس حکومت کو چلتا کر دینگے،انہوں نے کہاکہ تحریک انصاف کی حکومت نے حق حکمرانی کھو چکی ہے الیکشن سے قبل عوام سے جھوٹی وعدے کر کے سبز باغ دکھا کر عوام کو بے وقوف بنایا کہاں گئے ایک کروڑ نوکریاں،پچاس ہزار گھر بیرونی ممالک سے روزگار کے لئے یہاں آنے والے بیروگار لوگ اس نے تو ملک کے اندر لوگوں کو بیروزگار کردیا،تحریک انصاف دعوی کررہی تھی کہ اگر پٹرول مہنگا ہوگیا ڈالر اوپر چلا گیا تو وزیر اعظم چور ہے اب چور کو گھر جانا چاہیے تحریک انصاف کی حکومت نے ساڑھے تین سال میں ایک بھی ایسا ٹیم نہ بنا سکا جو عوام کو ریلیف فراہم کرسکیں،اس وقت عوام مہنگائی کی چکی میں پس رہی ہے خودکشیاں کرنے پر مجبور ہیں،اس وقت تمام سیاسی جماعتیں اسکے خلاف میدان میں نکلے ہیں،انہوں نے کہا کہ آنے والا دور پاکستان پیپلز پارٹی کا ہوگا،بلوچستان اور مرکز میں ہماری حکومت ہوگی بلوچستان سے بڑے بڑے لوگ ہماری پارٹی میں شامل ہوچکے ہیں،پیپلز پارٹی نے رخشان ڈویژن میں بے شمار ترقیاتی کام کئے ہیں اسی بنیاد پر ہم میدان میں نکلے ہیں ہم نے کھبی بھی عوام کے ساتھ جھوٹے وعدے نہیں کی ہے عوام اور پارٹی ورکزر اپنی تیاری تیز کرے اور 27 فروری کو عوامی سیلاب اسلام آباد کا رخ کریگا،قبل ازیں سابق وفاقی دراثناء پاکستان پیپلز پارٹی کے صوبائی کوآرڈینیٹر عبدالقادر بلوچ کا نوابزادہ امیر شہریار خان نوشیروانی کے ہمراہ یک مچھ بازار سے گزرتا ہوا گورگیج ہاوس پہنچا جہاں سردار محمد عمر گورگیج نے پرتکلف ظہرانہ کا اہتمام کیا۔ لیفٹیننٹ جنرل (ر) عبدالقادر بلوچ نے پرتکلف ظہرانے کے بعد سردار محمد عمر گورگیج ملک رحمت اللہ خان نوتیزئی اور پارٹی ورکرز کا شکریہ ادا کرتے ہوئے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جو عزت آپ دوستوں نے ہمیں دی ہے ہمیشہ یاد ریگی، انہوں نے پہلی بار خاران یک مچھ روڑ پے سفر کیا ہے کافی خوشی محسوس کر رہا ہوں، یک مچھ ٹو خاران کراس اور خاران بیسمہ روڑ بننے کے بعد یہ روٹ رخشان زون میں کاروباری مرکز بن جائے گا جس سے لوگوں کے لئے روز گار کے مواقع پیدا ہونگے، اس وقت ساری دنیا کی نظریں سی پیک پے لگے ہوئے ہیں خاران یک مچھ روڈرخشان زون کو سی پیک سے ملانا میری تاریخی پروجیکٹس میں سے ایک ہے جو مکمل فنکشنل ہونے کے بعد معاشی تبدیلی لائے گا،عبدالقادر بلوچ نے کہا کہ سردار محمد عمر گورگیج میرے اچھے دوست اور ترقی پسند سوچ رکھتے ہیں ہم دونوں کا وژن ایک ہی ہے جس طرح سردار گورگیج نے قومی گریڈ سے چاغی میں بجلی کو منسلک کیا اسی طرح ایسے اربوں کے پروجیکٹس خاران ٹرانسمیشن لائن گروک ڈیم کیڈٹ کالج ٹیکنیکل ٹریننگ سینٹر یا میرے اپنے زاتی خرچے سے رحیم نور زچہ و بچہ ہسپتال و دیگر پروجیکٹس جن کا کریڈٹ مجھے جاتا ہے، آنے والے وقت میں اس سے بھی بڑے بڑے پروجیکٹس لائیں نگے،اس موقع پر لیفٹیننٹ جنرل (ر) عبدالقادر بلوچ اور نوابزادہ امیر شہریار خان نوشیروانی کے ہمراہ پی پی پی کے ضلعی صدر میر شیرباز خان ساسولی اور ڈویژنل کوآرڈینیٹر میر محمد اعظم ریکی،میر بیبرگ نوشیروانی و ضیاء شفیع ودیگر موجود تھے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے