تنخواہوں و پنشن کی عدم ادائیگی،محکمہ واسا اور کوئٹہ سمیت اندرون صوبہ میونسپل ملازمین سراپا احتجاج ریلیاں جلسے

کوئٹہ (ڈیلی گرین گوادر) محکمہ واسا اور کوئٹہ میٹرو پولیٹن کارپو ریشن سمیت اندرون بلوچستان میونسپل کمیٹیوں کے مزدوروں اور ملازمین کو تنخواہوں کی عدم ادائیگی پنشن کے واجبات ادا نے کرنے،عارضی ملازمین کو کئی کئی ماہ تنخواہوں کی عدم ادائیگی کیخلاف مزدور و ملازمین سراپا احتجاج بن گئے، بلوچستان لیبر فیڈریشن کی کال پر کوئٹہ میں زرغون روڈ، میونسپل کارپوریشن اور وائٹ روڈ سے احتجاجی ریلیاں نکالی گئیں،سینکڑوں مزدوروں و ملازمین کا ایدھی چوک پر دھرنا تنخواہوں کی ادائیگی کا مطالبہ،حکومت بلوچستان صوبائی وزیر خزانہ اور سیکرٹری فنانس کے مزدور دشمن رویہ کی شدید مزمت کی گئی،بلوچستان لیبر فیڈریشن نے ملازمین و مزدوروں کے معاشی قتل کیخلاف احتجاج تنخواہوں کے حصو تک جاری رکھنے کا اعلان کردیا،ملازمین تنخواہوں اور پنشن سے محروم، حقوق کیلئے آواز بلند کی جائے، بدھ کو کوئٹہ سمیت بلوچستان بھر میں بلوچستان لیبر فیڈریشن کے زیر اہتمام احتجاجی مظاہرے اور ریلیاں منعقد کی گئیں اور محکمہ فنانس بلوچستان صوبائی وزیرخزانہ سیکرٹری خزانہ سے کوئٹہ سمیت بلوچستان بھر میں تنخواہوں و پنشن کے فنڈز کی لیٹ فراہمی پر برہمی کا اظہار اور مطالبات کے حل کیلئے نعرے بازی کی گئی، کوئٹہ میں تین مرکزی جلوس زرغون روڈ، وائٹ روڈ اور کوئٹہ میٹروپولیٹن کارپوریشن سے نکالے گئے جس کی قیادت خان زمان،قاسم خان،حضرت خان،عارف نیچاری،منظور احمد،عابد بٹ،فضل محمد،حاجی سعد اللہ،ملک وحید،ندیم کھوکھر اور دیگر رہنماؤں نے کی، کوئٹہ میں تمام احتجاجی جلوس مختلف شاہراہوں سے ہوتے ہوئے ایدھی چوک پہنچے جہاں ملازمین و مزدوروں نے دھرنا دیا اور محکمہ واسا میٹروپولیٹن کارپوریشن سمیت اندرون بلوستان میونسپل ملازمین کو تنخواہیں پنشن اور گریجویٹی کے واجبات ادا نہ ہونے کے خلاف اپنے خیالات کا اظہار کیا،بلوچستان لیبر فیڈریشن کے صدر خان زمان نے کہا کہ حکومت ہے نہ ادارے آج متعدد محکموں کے ملازمین تنخواہوں کیلئے سراپا احتجاج بن گئے ہیں،حکومت کی ہٹ دھرمی ہے یا غفلت اب مزید مہلت نہیں دینگے،تنخواہوں کا مسئلہ حل نہ ہوا تو بلوچستان بھر میں شدید احتجاج اور دھرنوں کی کال دیں گے، اس کے علاوہ بلوچستان لیبر فیڈریشن کی کال پر اندروں بلوچستان لورالائی ہرنائی ژوب، پشین، چمن قلات مستونگ، سبی ڈھاڈر ڈیرہ مراد جمالی اوستہ محمد خضدار حب مسلم باغ خاران واشک، نوشکی اور دیگر اضلاع میں میونسپل کمیٹیوں کے ملازمین کے معاشی استحصال اور ہر ماہ تنخواہوں و پنشن کی لیٹ ادائیگی کیخلاف احتجاجی ریلیوں مظاہرے منعقد ہوئے،دو روز میں مسئلہ حل نہ ہوا تو پھر صوبے بھر میں احتجاج کی کال دی جائے گی،ترجمان بلوچستان لیبر فیڈریشن عابد بٹ کے مطابق اندرون بلوچستان متعدد اضلاع میں بلوچستان لیبر فیڈریشن کی کال پر میونسپل ملازمین اوزار چھوڑ ہڑتال اور احتجاج پر ہیں،بیان میں تمام اضلاع کے مزدوروں و ملازمین کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ احتجاجی شیڈول پر عمل کرتے ہوئے تنخواہوں کے حصول کیلئے جدوجہد تیز کریں اور اپنے حقوق کیلئے بھر پور آواز بلند کی جائے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے